لاہور: لیڈی کانسٹیبل کو کس ٹک ویڈیو پر نوکری سے برطرف کیا گیا تھا؟

لاہورنیوز42(ویب ڈیسک)لاہور میں کچھ روز قبل ٹک ٹاک ویڈیو پر نوکری سے برطرف ہونیوالی لیڈی کانسٹیبل کو کس ٹک ٹاک ویڈیو پر ملازمت سے برطرف کیا گیا تھا؟

کچھ روز قبل پنجاب پولیس کے حکام نے لیڈی کانسٹیبل کو ایک ٹک ٹاک ویڈیو پر نوکری سے برطرف کردیا۔ اس ٹک ٹک ویڈیو میں خاتون نے پولیس کی وردی پہن رکھی تھی۔ اس ٹک ٹاک ویڈیو میں خاتون مختلف پنجابی آوازوں اور گانوں پر پرفارم کرتی نظر آتی ہیں۔

باجوڑ: سرحد پار سے دہشت گردوں کی فائرنگ، لانس نائیک شہید

ویڈیو دیکھ کر ایسا لگتا ہےکہ برطرف ہونیوالی خاتون پروفیشنل ٹک ٹاکر ہیں اور خاتون نے ایک نہیں کئی ٹک ٹاک ویڈیوز بنائی ہیں۔

واضح رہے کہ خاتون کو برطرف کرنے پر سوشل میڈیا پر پولیس حکام کو کڑی تنقید کا نشانہ بنایا گیا، لیڈی کانسٹیبل کی سائیڈ لینے والے افراد کا کہنا تھا کہ اس سے قبل بھی کئی پولیس والوں نے ٹک ٹاک ویڈیوز بنائیں لیکن انہیں کچھ عرصہ برطرف کرنے کے بعد دوبارہ بحال کردیا گیا جبکہ خاتون کو ایک وارننگ دے کر بحال کیا جاسکتا تھا۔

دوسری طرف خاتون کانسٹیبل نے اپنے ویڈیو پیغام میں کہا کہ میں نے ایسی کیا غلطی کردی ہے جو یہ ایسا کررہے ہیں۔ میں نے جانے انجانے میں 8 ماہ قبل ٹک ٹاک ویڈیو بنالی تھی جو میں اپنے موبائل میں رکھتی تھی لیکن کسی نے وائرل کردی۔ بجائے اسکے کہ مجھے وارننگ دی جاتی، میری تنخواہ کاٹ لی جاتی، مجھے سزا دی جاتی مجھے نوکری سے ہی نکال دیا گیا جبکہ باقی پولیس والے ٹک ٹاک ویڈیوز بناتے ہیں وہ نوکری پر موجود ہیں۔

Related posts

One Thought to “لاہور: لیڈی کانسٹیبل کو کس ٹک ویڈیو پر نوکری سے برطرف کیا گیا تھا؟”

Leave a Comment